کشمیر میں کھیلوں گا،انٹرنیشنل کھلاڑی نے بھارتی دھمکی مسترد کردی


لاہور( سپورٹس ڈیسک)بھارت کی طرف سے کشمیر پریمیئر لیگ کھیلنے پر آئی پی ایل سے آوٹ کرنے کی دھمکی پر کئی غیر ملکی کھلاڑی و آفیشل کے پی ایل سے دستبردار ہوگئے تاہم ایک کھلاڑی نے بھارتی دھمکی جوتی کی نوک پر رکھتے ہوئے کشمیر میں کھیلنے کااعلان کردیا۔

بھارتی کرکٹ بورڈ کے اعلیٰ عہدیدار کی دھمکی کو خاطر میں نہ لاکر ایک کھلاڑی انٹرنیشنل کھلاڑی نے کشمیر پریمیئر لیگ کھیلنے کو ترجیح دیتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ میں کشمیر میں کرکٹ کھیلنے ضرور آوں گا۔

بھارتی کرکٹ بورڈ کے عہدیدار نے کشمیر پریمیئر لیگ کھیلنے والے انٹرنیشنل کھلاڑیوں کو دھمکی دی تھی کہ اگر لیگ میں حصہ لیا تو ان کے لیے بھارت کے دروازے بند ہوں گے اور وہ کبھی بھارتی لیگ میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

تلکارتنے دلشان

بھارتی دھمکی پر کئی انٹرنیشنل کھلاڑی ہرشل گبز، مونٹی پنیسر، میٹ پرایئر ودیگر نے لیگ سے دستبرداری کا اعلان کیا تاہم سابق سری لنکن اوپنر تلکارتنے دلشان نے بھارتی دھمکیوں کے باوجود کشمیر پریمیئر لیگ کھیلنے کا اعلان کردیا۔

یاد رہے کہ کشمیر پریمیر لیگ 6سے 16 اگست تک مظفرآباد میں کھیلی جائے گی اور لیگ کا فائنل 16 اگست کو مظفرآباد میں ہی ہو گا، ذرائع کے مطابق چھ غیر ملکی کے پی ایل سے دستبردار ہوئے ہیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی بورڈ کے سی ای او نے انگلش بورڈز کو بھی دھمکایا ہے اور کھلاڑیوں کو دھمکی دی گئی ہے کہ کشمیر لیگ میں گئے تو بھارت میں گھسنے نہیں دیں گے، کشمیر لیگ کھیلی تو آئندہ بھارت میں کرکٹ نہیں کھیل سکو گے۔

0Shares

Comments are closed.