پسنی، نیاسال منانے جزیرہ استولہ جانے والے متعدد افراد پھنس گئے


فوٹو : فائل

پسنی(ویب ڈیسک ) نئے سال کا جشن منانا مہنگا پڑ گیا،بغیر این او سی لئے بلوچستان کے علاقے پسنی کے قریب سیاحتی جزیرے استولہ پر جانے والے متعدد افراد پھنس گئے۔

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر گوادر انیس گورگیج کے مطابق جزیرہ استولہ میں 10 سے زائد افراد کے پھنسے ہونے کی اطلاعات ہیں، ابتدائی اطلاعات کے مطابق پھنسے ہوئے افراد میں وکلاء بھی شامل ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ اطلاعات کے مطابق پھنسے ہوئے افراد 31 دسمبر کو نیا سال منانے استولہ گئے تھے اور اب سمندر میں طغیانی کی وجہ سے جزیرے سے واپس پسنی نہیں پہنچ سکے۔

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کے مطابق سمندری ہواؤں اور تیز لہروں کے باعث جزیرے تک رسائی میں مشکل پیش آرہی ہے، استولہ پر جانے کے لیے متاثرہ افراد نے این او سی بھی نہیں لیا تھا۔

اطلاعات کے مطابق جزیرے میں پھنسے ہوئے افراد نے اپنے گھرو والوں سے رابطہ کرکے صورتحال سے آگاہ کیا ہے جس کے بعد انہیں جزیرے سے بحفاظت واپس لانے کے انتظامات کیے جارہے ہیں۔

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر گوادر انیس گورگیج کے مطابق جزیرہ استولہ میں 10 سے زائد افراد کے پھنسے ہونے کی اطلاعات ہیں، ابتدائی اطلاعات کے مطابق پھنسے ہوئے افراد میں وکلاء بھی شامل ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ اطلاعات کے مطابق پھنسے ہوئے افراد 31 دسمبر کو نیا سال منانے استولہ گئے تھے اور اب سمندر میں طغیانی کی وجہ سے جزیرے سے واپس پسنی نہیں پہنچ سکے۔

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کے مطابق سمندری ہواؤں اور تیز لہروں کے باعث جزیرے تک رسائی میں مشکل پیش آرہی ہے، استولہ پر جانے کے لیے متاثرہ افراد نے این او سی بھی نہیں لیا تھا۔

اطلاعات کے مطابق جزیرے میں پھنسے ہوئے افراد نے اپنے گھرو والوں سے رابطہ کرکے صورتحال سے آگاہ کیا ہے جس کے بعد انہیں جزیرے سے بحفاظت واپس لانے کے انتظامات کیے جارہے ہیں۔

یاد رہے کہ جزیرہ استولہ بلوچستان کے ضلع گوادر میں واقع ہے اور 15 جون 2017 کو صوبائی حکومت نے اس جزیرے میں سمندری و جنگلی حیات کے تحفظ کے لیے جزیرے کو میرین پروٹیکٹڈ ایریا ڈکلیئر کیا تھا تاکہ وہاں انسانوں کی زیادہ آمد و رفت کی وجہ سے قدرتی ماحول کو نقصان نہ پہنچے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.