ترقی پذیر ممالک سے منی لانڈرنگ کی حوصلہ افزائی نہیں ہونی چاہیے، عمران خان

اسلام آباد: ترقی پذیر ممالک سے منی لانڈرنگ کی حوصلہ افزائی نہیں ہونی چاہیے، عمران خان کا پاکستان میں برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر سے ملاقات میں زور، ملاقات میں دوطرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے امور پر بھی تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

ملاقات کے دوران سابق وزیراعظم وچیئرمین تحریک انصاف نے منی لانڈرنگ کے ذریعے غریب ممالک سے سرمائے کی ترسیل کے تدارک کی ضرورت پر زور دیا۔

عمران خان نے کہا کہ سرمائے کی غیر قانونی ترسیل ترقی پذیر ممالک کا بڑا مسئلہ ہے، دولت کی اس غیر قانونی ترسیل سے عالمی سطح پر معاشی ناہمواریوں کو فروغ ملتا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کا فیکٹائی پینل اپنی رپورٹ میں اس معاملے کی نزاکت اجاگر کرچکا ہے، سرمائے کی یہ غیر قانونی ترسیل غریب ممالک کے باشندوں میں ہجرت کے رجحان کو ابھارتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عدل و انصاف کا تقاضا ہے کہ عالمی سطح پر منی لانڈرنگ کے مؤثر انسداد کیلئے حکومتیں اقدامات اٹھائیں، برطانوی حکومت اس باب میں کلیدی کردار ادا کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

ملاقات کے موقع پر مرکزی سینئر نائب صدر پی ٹی آئی فواد چودھری اور مرکزی ایڈیشنل سیکرٹری جنرل عامر محمود کیانی بھی موجود تھے.

0Shares

Comments are closed.