حمزہ شہباز کی اکثریت برقرار رکھنے کےلئے ادارے زور لگا رہے ہیں، فواد چوہدری

اسلام آباد(ویب ڈیسک) تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے کہا ہے حمزہ شہباز کی اکثریت برقرار رکھنے کےلئے ادارے زور لگا رہے ہیں، فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ حمزہ شہباز کے پاس پنجاب اسمبلی میں اکثریت نہیں رہی۔

اس حوالے سے ایک بیان میں انھوں نے کہا کہ تمام ادارے زور لگا رہے ہیں کہ حمزہ شہباز کو وزیر اعلیٰ کیسے برقرار رکھا جائے.

فواد چوہدری نے کہا کہ ایک ماہ سے زیادہ گزر گیا پنجاب میں کوئی حکومت نہیں ہے، صوبے میں اس وقت شدید انتظامی بحران ہے۔

سابق وزیراطلاعات نے کہا کہ قانون کہتا ہے اسمبلی ممبران کے ڈی نوٹی فائی ہونے پر متبادل ممبران نوٹیفائی ہو جائیں گے، ہفتہ گزر گیا الیکشن کمیشن تحریک انصاف کے ممبران کو نوٹیفائی نہیں کر رہا۔

فواد چوہدری نے کہا کہ منحرف اراکین پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد حمزہ شہباز کا الیکشن کالعدم ہوگیا، لاہور ہائی کورٹ میں اس معاملے کو سنجیدگی سے نہیں لیا جارہا۔

فواد چوہدری نے کہا کہ اداروں کا کام ہے سیاسی جماعتوں سے آئین کے مطابق ڈیل کریں، حمزہ شہباز کو وزیرِاعلیٰ رکھنے کے لیے آئین کی سنگین خلاف ورزیاں ہو رہی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ایسے اقدامات سے پاکستان کی جمہوریت، معاشرے کی اساس کو خطرات لاحق ہیں، اداروں کو قطعی حق نہیں بغیر اکثریت کسی شخص کو عوام پر مسلط رکھا جائے۔

فواد چوہدری نے کہاکہ الیکشن کمیشن نے پنجاب میں ضمنی انتخاب کا یکطرفہ اعلان کردیا، الیکشن کمیشن نے سپریم کورٹ کے 90 روز میں الیکشن کروانے کے حکم کا انتظار نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ وزیرِاعلیٰ پنجاب کا انتخاب دوبارہ ہونا ہے اس پر کوئی کارروائی نہیں کی جا رہی ہے. واضح رہے کہ حمزہ شہباز کو ووٹ دے کر 25 ارکان نااہل ہوچکے ہیں.

عدالت کہہ چکی ہے کہ نااہل ہونے والوں کے ووٹ گنتی نہیں ہوں گے اس کے باوجود عدالت اور آئین کے منافی پنجاب میں وزیراعلیٰ کام کر رہے ہیں.

0Shares

Comments are closed.