فوج اپنے سابق آرمی چیف کے مزار کی بے حرمتی کا نوٹس لے، اعجاز الحق

اسلام آباد( زمینی حقائق ڈاٹ کام )پاکستان مسلم لیگ ضیا کے صدر اعجاز الحق نے کہاہے ضیاء الحق کے مزار کی آصف زرداری کی ایما پر بے حرمتی کی گئی، اعجاز الحق نے کہا زرداری اور بلاول بھٹو معذرت کریں ایسا نہ ہو لاڑکانہ میں بھی ایسی نعرہ بازی ہو جائے۔

اسلام آبادمیں پریس کانفرنس میں سابق وفاقی وزیر اعجاز الحق نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے شرپسند کارکنوں کی جانب سے فیصل مسجد اسلام آباد کے احاطے میں واقع ضیا الحق کے مزار کی بے حرمتی ان کے غیر مہذب ہونے کا ثبوت ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس واقعے سے ضیا الحق کے چاہنے والوں کی دل آزاری ہوئی ہے،یہ واقعہ باقاعدہ منصوبہ بندی اور پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور آصف زرداری کی ایما پر کیا گیا۔

http://

اعجاز الحق کا کہنا تھا کہ یہ سانحہ موجودہ حکومت اور اسلام آباد کی ضلعی انتظامیہ کی ناکامی اور غفلت کا نتیجہ ہے، اس واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ اس واقعے سے حکومت اور پاکستان کی دنیا بھر میں جگ ہنسائی ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ میں مطالبہ کرتا ہوں کہ پاکستانی فوج اپنے سابق آرمی چیف کے مزار کی بے حرمتی کا نوٹس لے، اعجاز الحق نے کہا حکومت بھی واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ملوث تمام افراد کے خلاف کارروائی کرے۔

اعجاز الحق کا کہنا تھا کہ ضیاء الحق کے مزار کی بے حرمتی کرنے والوں کے خلاف کارروائی نہ ہوئی تو مزید مزاروں کی بھی بے حرمتی ہوسکتی ہے۔وزیراعظم اور وزیر داخلہ کی جانب سے فون آئے کہ ہم نے پولیس کو مزار کی نگرانی کی ہدایات جاری کردی ہیں آئندہ ایسا نہیں ہوگا۔

http://

انہوں نے مطالبہ کیا کہ بلاول بھٹو زرداری اور آصف زرداری کے خلاف مزار کی بے حرمتی کے حوالے سے ایف آئی آر درج ہونی چاہیے، اور واقعے پر بلاول بھٹو اور آصف زردادی کو معافی مانگنی چاہیے۔

واضح رہے کہ پیپلز پارٹی کے عوامی مارچ کی اسلام آباد آمد کے موقعے پر پارٹی کے بعض کارکن فیصل مسجد میں سابق آرمی چیف و صدر ضیا الحق کے مزار احاطے میں ضیا الحق کے خلاف اور سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی حمایت میں نعرے بازی کی، ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

0Shares

Comments are closed.