ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے نیا پینڈورا باکس کھول دیا

فوٹو :فائل

کراچی(ویب ڈیسک) ایم این اے و ٹی وی میزبان ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے نیا پینڈورا باکس کھول دیا اور دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے پہلی دونوں بیویوں کو طلاق دی نہ خلع پر دستخط کئے.

ڈاکٹر عامر لیاقت حسین یوٹیوبر نادر علی کے پوڈکاسٹ میں شریک ہوئے جس میں انھوں نے اپنی بیویوں سے متعلق کھل کر باتیں کیں اور یہ بھی واضح کیا کہ وہ عدالت گئے اور نہ ہی انہوں نے خلع کے کاغذات پر دستخط کیے۔

اس سے قبل عامر لیاقت کی پہلی بیوی ڈاکٹر بشریٰ اقبال نے دسمبر 2020 کو بتایا تھا کہ انھیں ان کے شوہر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے انہیں فون پر طلاق دے دی ہے۔

عامر لیاقت حسین کی دوسری شادی جولائی 2018 میں ہوئی تھی، پہلی کی طرح دوسری بیوی طوبیٰ انور نے رواں ماہ 9 فروری کو انسٹاگرام پر پوسٹ میں بتایا تھا کہ انہوں نے شوہر سے خلع لے لی.

عامر لیاقت حسین نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ تیسری بیوی دانیہ شاہ 2003 میں پیدا ہوئیں، جبکہ پہلی بیوی سے ان کے بیٹے سے تیسری بیوی 4 سال چھوٹی ہے.

پروگرام کے دوران دانیہ شاہ نے اپنی پیدائش کا سال نہیں بتایا، تاہم کہا کہ جب وہ بچپن میں روتی تھیں تو والدہ ٹی وی پر عامر لیاقت کا پروگرام لگا دیتی تھیں تو وہ چپ ہوجاتی تھیں۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ عامر لیاقت حسین نے کیا تحفہ دیا ہے تو دانیہ شاہ نے بتایا کہ انہیں منہ دکھائی میں شوہر نے گاڑی بطور تحفہ دی ہے اور وہ ہنی مون کے لیے تھائی لینڈ جائیں گے۔

پروگرام میں عامر لیاقت حسین نے پہلی دونوں کی تعریفیں بھی کیں اور ان کے مستقبل کے لیے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا یہ بھی بتایا کہ اپنے بچوں کے تعلیمی اخراجات وہ خود اٹھا رہے ہیں۔

عامر لیاقت کے مطابق انہوں نے پہلی بیوی کو بچوں کی خاطر 8 کروڑ روپے مالیت کا گھر دیا، جس میں وہ اس وقت رہائش پذیر ہیں جب کہ 2 کروڑ روپے مالیت کا دوسرا گھر بھی انہوں نے پہلی اہلیہ کو دیا۔

رکن قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ انہوں نے پہلی اہلیہ کو بی ایم ڈبلیو گاڑی دلوائی تھی، جسے فروخت کرکے اس کی نقد رقم بھی انہیں ہی دی گئی۔

پہلی بیوی بشریٰ کے ساتھ

یہ بھی کہا کہ انہوں نے پہلی بیوی کے والد کی تدفین و کفن کا انتظام کیا اور سسر کو عبداللہ شاہ غازی کے احاطے میں دفن کروایا، جہاں وہ خود بھی دفن ہونا چاہتے تھے۔

انہوں نے طوبیٰ انور کے حوالے سے بھی بتایا کہ انہوں نے انہیں 65 لاکھ روپے کی گاڑی اور لاکھوں روپے مالیت کی ٹی وی اسکرین دی، البتہ انہیں گھر نہیں دے سکے۔

عامر لیاقت کا کہنا تھا کہ طوبیٰ انور کو ان کی وجہ سے شہرت ملی اور آج وہ بہت آگے جا چکی ہیں مگر پہلے انہیں کوئی جانتا تک نہیں تھا تاہم وہ پہلی دونوں بیویوں کے لیے دعاگو ہیں کہ وہ مزید ترقی کریں۔

کوئی عالم دین بیویوں کی خلع کو درست قرار نہیں دے گا 

ایک سوال کے جواب میں عامر لیاقت نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے پہلی دونوں بیویوں کو طلاق نہیں دی اور نہ ہی وہ عدالت گئے نہ خلع کے کاغذات پر دستخط کیے.

ان کا کہنا تھا کہ ان کی بیویوں نے خلع اور طلاق کا اعلان کردیا جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا طلاق اور خلع ہوگئی تو بولے کہ پاکستانی قوانین کے تحت تو ان کی علیحدگی ہوگئی۔

انہوں نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ پہلی دونوں بیویوں سے طلاق یا خلع مذہبی طریقے سے نہی ہوئی اور مولانا طارق جمیل سمیت کوئی بھی عالم دین ان کی بیویوں کی خلع کو درست قرار نہیں دے گا۔

ڈاکتر عامر لیاقت حسین نے یہ بھی بتایا کہ اب ان کی شادی آخری ہے، اب وہ ڈھلتی عمر میں شادی نہیں کر پائیں گے، ساتھ ہی انہوں نے مرد حضرات کو تجویز دی کہ وہ باہر منہ مارنے کے بجائے شادیاں کریں۔

0Shares

Comments are closed.