ٹی ٹی پی سے رابطہ ہے، غیر مسلح ہوئے تو معاف کردیں گے، وزیراعظم

اسلام آباد(زمینی حقائق ڈاٹ کام) وزیراعظم عمران خان نے بتایا ہے کہ حکومت کی کا لعدم تحریک طالبان پاکستان سے افغانستان سے بات چیت چل رہی ہے اوراگر پاکستانی طالبان ہتھیار ڈال دیں تو انہیں معاف کردیں گے۔

عمران خان نے ترکی کے ایک ٹی وی چینل کو دیئے گئے انٹرویو میں کہا کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے گروپوں سے مزاکرات میں افغان طالبان مصالحتی کردار ادا کر رہے ہیں۔

سوال کے جواب میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم نہیں جانتے کہ ٹی ٹی پی کے ساتھ بات چیت نتیجہ خیز ہوگی یا نہیں،تاہم ہماری کوشش ہے کہ وہ ہتھیار چھوڑ دیں۔

انھوں نے کہا میں چونکہ عسکری حل پر یقین نہیں رکھتا، اسی لئے ہمارا ہمیشہ سے مؤقف رہا ہے کہ افغانستان کا فوجی حل نہیں ہے، ٹی ٹی پی کے کچھ گروپس پاکستانی حکومت سے بات چیت کرنا چاہتے ہیں۔

حکومت پاکستان ان کو غیر مسلح کرنے کے لیے ان سے بات چیت کر رہی ہے، پاکستانی طالبان اگر ہتھیار ڈال دیں تو انہیں معاف کردیں گے، ٹی ٹی پی کے جنگجو ہتھیار ڈال کر ملک میں عام شہری کی طرح رہ سکتے ہیں۔

0Shares

Comments are closed.