شہبازشریف اور فیملی منی لانڈرنگ الزامات سے بری، اکاؤنٹس بحال

0 0
Read Time:1 Minute, 5 Second

اسلام آباد(ویب ڈیسک) قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر و مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف اور ان کے خاندان کو برطانوی عدالت نےمنی لانڈرنگ اورمجرمانہ سرگرمیوں کے الزامات سے بری کردیا۔

شہباز شریف اور ان کے بیٹے سلیمان شریف کے منجمد بینک اکاؤنٹس کی تحقیقاتی رپورٹ برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی نے ویسٹ منسٹر کورٹ میں جمع کرائی جس میں انھیں بے قصور ٹھہرایا گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ تحقیقات کے دوران شہباز شریف اور ان کے خاندان کے بینک اکاؤنٹس میں منی لانڈرنگ، کرپشن اور مجرمانہ سرگرمی کا کوئی ثبوت نہیں ملے ہیں۔

ویسٹ منسٹر کورٹ میں جمع کرائی

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ21 ماہ کی تحقیقات میں 20 سال کے مالی معاملات کا جائزہ لیا گیا ہے۔

 حکومت پاکستان، نیب اورایسٹ ریکوری یونٹ کی درخواست پر پر یہ تحقیقات شروع کی گئی تھی اس دوران شہباز شریف اور شریف خاندان کے برطانیہ اورمتحدہ عرب امارات میں اکاونٹس کی چھان بین کی گئی۔

برطانوی عدالت نے شہباز شریف اور ان کے خاندان کو منی لانڈرنگ اورمجرمانہ سرگرمیوں کے الزامات سے بری کردیا اور منجمد اکاؤنٹس بھی بحال کرنے کا حکم دے دیا۔

مزکورہ بینک اکاؤنٹس کو اعلیٰ درجےکی تحقیقات سے مشروط کیا گیا تھا جبکہ ان اکاؤنٹس کو پاکستان کی برطانوی حکومت سےکرپشن کاپیسہ واپس لانےکی درخواست کےبعدمنجمد کیا گیا تھا۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Comments are closed.

Translate »