پاکستان نےامریکہ کیساتھ فضائی معاہدہ کی رپورٹس مسترد کر دیں

اسلام آباد(زمینی حقائق ڈاٹ کام) دفتر خارجہ نے افغانستان میں فوجی اور خفیہ کارروائیوں کیلئے امریکہ کے پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے سے متعلق معاہدے کی خبروں کو مسترد کیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے دوٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ امریکہ کے ساتھ ایسا کوئی معاہدہ نہیں ہواہےاس حوالے سے رپورٹس درست نہیں ہیں۔ 

ترجمان دفتر خارجہ نے نے کہا کہ علاقائی سلامتی اور انسداد دہشت گردی کیلئے پاکستان اور امریکا کے درمیان تعاون ایک عرصے سے قائم ہے اور فریقین میں اس حوالے سے باقاعدہ مشاورت ہوتی رہی۔

اس سے قبل امریکا کے سرکاری نشریاتی ادارے سی این این کی طرف سے کہا گیا تھا جوبائیڈن انتظامیہ نے امریکی اراکین کانگریس کو پاکستان کے ساتھ ہونے والے سمجھوتے سے آگاہ کر دیا ہے۔

سی این این کی رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا کہ امریکی اراکین کانگریس کو پاکستان کے ساتھ ہونے والے سمجھوتے سے گزشتہ روز آگاہ کیا گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نے فضائی حدود کے استعمال کے بدلے امریکا سے انسداد دہشتگردی کے لیے امداد کی فراہمی کے ایم او یو کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

اس حوالے سے امریکی نشریاتی ادارے کا مزید کہنا ہے کہ پاکستان نے فضائی حدود کے استعمال کے بدلے بھارت سے تعلقات کے معاملے میں مدد کی بھی خواہش ظاہر کی ہے۔

سی این این کی رپورٹ میں ذرائع کا حوالہ دے کر بتایا گیا کہ امریکا سے پاکستان کے مذاکرات جاری ہیں، سمجھوتے کو حتمی شکل نہیں دی گئی اور اس میں تبدیلی بھی ہوسکتی ہے۔

0Shares

Comments are closed.