حکومت نے پیٹرول، ڈیزل اور مٹی کاتیل 30 روپے فی لیٹر مہنگا کردیا

اسلام آباد( زمینی حقائق ڈاٹ کام )وزیراعظم شہباز شریف کی حکومت نے پیٹرول، ڈیزل اور مٹی کاتیل 30 روپے فی لیٹر مہنگا کردیا، نئی قیمت کا نفاذ آج رات 12 بجے سے ہی ہوگا۔

وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سابق حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے آج مہنگائی ہے، ماضی کی حکومت کے فارمولے پر جاتے تو پیٹرول کی فی لیٹر قیمت 205 روپے ہوتی۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھا کہ پیٹرول اور ڈیزل مہنگا ہونے سے تھوڑی سی مہنگائی بڑھتی ہے البتہ پیٹرول کی قیمت میں اضافہ سے روپے کو استحکام ملے گا،اس سے ملکی معیشت میں بہتری آئے گی۔

انھوں نے کہا ہم ایسا نہ کرتے مگر آئی ایم ایف نے بھی پیٹرول کی قیمت بڑھانے تک ریلیف دینے سے انکار کردیا تھا اس لئے مجبوراً ہمیں اپنے عوام پر بوجھ ڈالنا پڑا ہے۔

مفتاح اسماعیل نے بتایا کہ عوام پر کسی بھی قسم کا بوجھ ڈالنا ہمارے لیے مشکل فیصلہ تھا مگر سابق حکومت نے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت کو فکس کیا، جس کی وجہ سے ہمیں انتظام کرنے میں مشکلات پیش آئیں۔

انھوں نے کہا کہ آج ہمیں مشکلات کا سامنا ہے مگر وزیراعظم شہبازشریف نے قیمتوں میں اضافے کا یہ مشکل فیصلہ لیا ہے ہمیں اس بات کا پتہ ہے کہ عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔

وزیرخزانہ کا مزید کہنا تھا کہ جیسے ہی روپے کی قدر میں اضافہ ہوگا، پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نیچے آئیں گی، ہم سمجھتے ہیں فیصلے سے ہماری سیاست کو نقصان پہنچے گا مگر ہمارے لیے ملک اور معاشی صورت حال زیادہ اہم ہے۔

واضح رہے مفتاح اسماعیل سمیت جے یو آئی پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن جب اپوزیشن میں تھے تو سابق حکومت کی طرف سے10سبسڈی کو کم قرار دے کر زیادہ سبسڈی کا مطالبہ کرتے تھے جب کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے کو بھیک مانگنا کہتے تھے۔

0Shares

Comments are closed.