بجلی کی لوڈشیڈنگ 12 گھنٹے ، ڈالر اوپن مارکیٹ میں 194 روپے تک پہنچ گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) بجلی کی لوڈشیڈنگ 12 گھنٹے ، ڈالر اوپن مارکیٹ میں 194 روپے تک پہنچ گیا ،پاکستان میں ڈالر کی اونچی اڑان کا سلسلہ جاری ہے۔

آج جمعہ کو اوپن مارکیٹ میں ڈالر ایک روپیہ 50 پیسے مہنگا ہونے کے بعد 194 روپے پر فروخت ہونے لگا جبکہ انٹر بینک میں کاروبار کے دوران ڈالر مزید ایک روپے 23 پیسے مہنگا ہو کر قیمت 193 روپے کا ہو گیا۔

پاکستان سٹاک ایکسچینج 100 انڈیکس میں کاروبار کے دوران 133 پوائنٹس کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور انڈیکس اس وقت 43 ہزار 31 پر ٹریڈ کر رہا ہے۔

ڈالر 193،پانی ہے نہ بجلی، پوری حکومت لندن بیٹھی ہے، فواد چوہدری 

سابق وزیر اطلاعات فواد چودھری نے نے ڈالر کی قیمت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ روپیہ 193 روپے فی ڈالر پر چلا گیا، پوری نام نہاد حکومت لندن بیٹھی ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نے حکومت پر تنقید بناتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب میں پانی میسر نہیں، خریف کی فصلیں تباہ ہو رہی ہیں، ملک میں کوئی حکومت نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ مذاق بند کریں عبوری حکومت بنائیں اور انتخابات کرائیں۔

دوسری طرف ملک میں توانائی کا بحران سنگین صورتحال اختیارکرنے لگا ہے۔ مختلف شہروں میں 8 سے 12 گھنٹے کے لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔

پاور ڈویژن ذرائع کا کہنا ہے کہ ملک میں بجلی کا شارٹ فال 4 ہزار 743 میگاواٹ پر پہنچ چکا ہے، بجلی کی مجموعی پیداوار 20 ہزار 757 میگا واٹ جب کہ طلب 25 ہزار2 سو میگاواٹ تک پہنچ چکی ہے۔

ملک میں بجلی کی مجموعی پیداواری صلاحیت 36 ہزار 39 میگاواٹ ہےذرائع کے مطابق پن بجلی ذرائع سے 5 ہزار 37 میگاواٹ بجلی پیدا ہورہی ہے.

سرکاری تھرمل پاور پلانٹس 821 میگاواٹ جبکہ نجی شعبے کے بجلی گھروں کی پیداوار 11 ہزار 717 میگاواٹ ہے، ونڈ پاور پلانٹس 535 میگاواٹ بجلی پیدا کر رہے ہیں۔ بگاس پاور پلانٹس سے 162 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے۔

نیوکلیئر پاور پلانٹس کی پیداوار 2 ہزار 372 میگاواٹ اور سولر پاور پلانٹس سے 114 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے۔ موسم کی شدت میں اضافے کے ساتھ شارٹ فال میں بھی مزید اضافے کا خدشہ ہے۔

0Shares

Comments are closed.