علیم خان عمران خان کے انٹرویو پر تلملا اٹھے،ٹی وی مناظرے کا چلینج دیدیا

لاہور(زمینی حقائق ڈاٹ کام) علیم خان عمران خان کے انٹرویو پر تلملا اٹھے،ٹی وی مناظرے کا چلینج دیدیا کہا ہے عمران خان کے ساتھ ان الزامات پر کسی بھی چینل پر مناظرے کےلئے تیار ہوں۔

علیم خان نے عمران خان کے انٹرویو کے ردعمل میں کہا کہ عمران خان نے الزام لگایا کہ علیم خان 300 ایکڑ زمین لیگلائز کروانا چاہتا تھا، میں 2010 سے 2018 تک اپوزیشن میں عمران خان کے ساتھ کھڑا رہا۔

انھوں نے کہا کہ یہ سوسائٹی 2010 میں بھی میرے پاس تھی جو آج بھی میرے پاس موجود ہے، عمران خان میرے والد کی وفات پر اس سوسائٹی میں آئے تھے۔

ان کا کہنا تھا کیا 10 سال پہلے مجھے پتہ چل گیا تھا کہ عمران خان 2018 میں وزیراعظم ہوں گے، میرے پاس 300 ایکٹر نہیں 3000 ایکڑ زمین ہے، میں نے زمین ایکوائر نہیں کروائی بلکہ پرائیویٹ زمینداروں سے خریدی ہے، یہ زمین اب روڈا کے پاس ہے یہ اتھارٹی عمران خان نے بنائی۔

ان کاکہنا تھا یہ زمینیں روڈا نے سرکاری قیمت پر خرید کر پرائیویٹ ڈیولپرز کو کیسے دیں اب تفتیش ہونی چاہیے کہ یہ زمینیں کن ڈیولپرز کو دی گئیں، سرکاری ریٹ پر خرید کر زمینیں من پسند پرائیویٹ ڈیولپرز کو دی گئیں، ایل ڈی اے کے وائس چیئرمین کے رشتہ دار بھی کیا ان ڈیولپرز میں شامل ہیں؟

انھوں نے کہا سرکاری ریٹ پر زمین ایکوائر کرکے پلازے بنائے گئے، اگر روڈا کے تحت آپ کا گالف کورس بن سکتا ہے تو علیم خان کی سوسائٹی کیوں نہیں؟ اگر روڈا پراجیکٹ براون ہے تو وہیں میری زمین کیسے گرین ہوں گی؟

علیم خان نے کہا ہر مشکل وقت میں کیا میں اس لیے کھڑا تھا کہ 300 ایکٹر کا اسٹیٹس تبدیل کروانا تھا؟ اگر میرے بارے میں غلط الزام لگائیں گے تو چپ میں بھی نہیں رہوں گا، اگر میرا نام تمیز سے لیں گے تو میں بھی آپ کا نام تمیز سے لوں گا.

ان کا کہنا تھا کہ اگر آپ منہ کھلوانا چاہتے ہیں تو کسی چینل پر میرے اور جہانگیر ترین کے ساتھ بیٹھیں، پھر سب سچ بولیں تاکہ عوام کو پتہ چلے علیم خان، جہانگیر ترین اور عمران خان کا اصل چہرہ کیا ہے۔

پی ٹی آئی کے منحرف رہنما نے کہا کہ عمران خان سن لیں میرے پاس اس وقت 10 ہزار ایکڑ سے زائد زمین ہے، آپ نے 300 ایکڑ پر الزام لگا دیا میری محنت اور کوشش کا یہ مول لگایا، لوگوں کے سامنے سچ بولیں اور انہیں حقائق بتائیں۔

علیم خان نے بتایا میں امریکی اور یورپین سفیر کو عمران خان کے گھر ملا تھا، برطانوی سفیر کو اگر آپ حکومت میں آنے سے پہلے مل سکتے ہیں تو حکومت میں کیوں نہیں، آپ ملیں تو محب وطن کوئی اور ملے تو غدارہے.

انہوں نے مزید کہا کہ ہم مصلحت کے تحت خاموش ہیں، آپ سیاست کریں لوگوں کو ورغلائیں جھوٹ بولیں لیکن میں سچ بولوں گا آپ سامنے ہوں تب بھی۔

0Shares

Comments are closed.