شیخ رشید کے بھتیجے رکن قومی اسمبلی شیخ راشد شفیق کو جیل بھیج دیاگیا

راولپنڈی( زمینی حقائق ڈاٹ کام)شیخ رشید کے بھتیجے رکن قومی اسمبلی شیخ راشد شفیق کو مدینہ واقعہ پر جیل بھیج دیاگیا،اٹک کی مقامی عدالت کا شیخ راشد شفیق سے موبائل برآمد نہ کرنے پر اظہار برہمی ۔

پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی شیخ راشد شفیق کو دو روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر پولیس نے اٹک کی مقامی عدالت مین پیش کیا،اس موقع پر عدالت کے باہر پی ٹی آئی کے کارکن بھی پہنچے اور نعرے بازی کرتے رہے۔

عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پوچھا کہ موبائل برآمد کیوں نہیں کیا، پولیس نے بتایا موبائل فون سعودی عرب میں رہ گیا ہے، عدالت نے دو بجے تک ای ایم آئی نمبر ٹریس کر کے پیش کرنے کا حکم دیا تاہم پولیس مقررہ وقت پر پیش نہ کر سکی۔

اس دوران عدالت سے پولیس نے ملزم کے مزید ریمانڈ کی استدعا کی جسے مسترد کرتے ہوئے شیخ راشد شفیق کوچودہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل کرنے کا حکم دے دیا۔

راشد شفیق کے عدالت میں پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے، پولیس نے ضلع کچہری کو مکمل طور پر سیل کردیا، کچہری کے مین گیٹ پر بھی پولیس کے مسلح دستے تعینات کیے گئے۔

اس دوران پولیس نے میڈیا کے نمائندوں کے ساتھ بدتمیزی کرتے ہوئے کچہری سے نکال دیا، ایم این اے صداقت عباسی، ایم پی اے سابق صوبائی وزیر راجہ راشد حفظ اور سابق صوبائی وزیر یاور بخاری کو بھی بڑی مشکل سے اندر جانے دیا گیا۔

واضح رہے کہ مسجد نبوی میں وزیراعظم کے وفد کو چور چور کہتے کہنے کے واقعہ پر شیخ راشد شفیق نے سوشل میڈیا پر اپنی ویڈیو اپ لوڈ کی تھی،جبکہ پولیس نے شیخ راشد شفیق کو 30 اپریل کو اسلام آباد ائیرپورٹ سیگرفتار کیا گیا تھا۔

0Shares

Comments are closed.