نواز شریف اور بلاول کی لندن میں ملاقات، اتفاق رائے سے ساتھ چلنے کا عزم

فوٹو: سکرین گریب

لندن (ویب ڈیسک)نواز شریف اور بلاول کی لندن میں ملاقات، اتفاق رائے سے ساتھ چلنے کا عزم ظاہر کیاگیا، چیئر مین پاکستان پیپلز پارٹی نے کہا ہمیں میثاق جمہوریت کی طرح آگے ساتھ مل کر چلنا ہو گا۔

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے جمعرات کو مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف سے حسن نواز کے دفتر میں ملاقات کی ، پیپلزپارٹی کے وفد کا حسن اور حسین نواز نے استقبال کیا،ملاقات میں شیری رحمان، نوید قمر، قمر زمان کائرہ اور قاسم گیلانی شامل تھے۔

ملاقات کے بعد بلاول بھٹو اور نواز شریف نے پریس کانفرنس کی ، نواز شریف نے کہاکہ عمران خان سے قوم کو نجات دلانا بہت ضروری تھا۔
انہوں نے بدتمیزی اور غنڈہ گردی کے کلچر کو فروغ دیا تھا۔

نواز شریف کا کہنا تھا کہ عمران خان نے ملک کا برا حال کردیا تھا، جس کو بحال کرنے میں وقت لگے گا،پونے چار سال سیاہ ترین تھے، ہر بات پر یوٹرن لیا گیا۔

http://

نواز شریف نے عمران خان کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ کہتے تھے کہ آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑے تو خودکشی کر لوں گا، انھوں نے کہا اب ہم سب کو سر جوڑ کر بیٹھنا ہے کہ ملک کا جو نقصان ہوچکا ہے اس کی تلافی کیسے کی جائے۔

نواز شریف نے عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کون سی بیرونی سازش ہوئی ہے ، تم نے کون سے ایٹمی دھماکے کئے ہیں جو کوئی تمہارے خلاف سازش کرے گا،انھوں نے کہا کہ وہ تین بار وزیراعظم منتخب ہوئے اب ان کی تمنا ہے کہ ملک کو منزل تک پہنچائیں۔

سابق وزیراعظم پاکستان نے بلاول بھٹو کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے میرے پاس آکر اچھے جذبات کا اظہار کیا ہے، اس موقع پرنواز شریف نے قوم سے اپیل کہ وہ ہماری کامیابی کے لیے دعا کرے۔

ملاقات کے بعد پیپلز پارٹی کی طرف سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیاہے کہ بلاول بھٹو زرداری اور میاں نواز شریف کے درمیان ملاقات میں ملک کی مجموعی سیاسی صورت حال پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔

http://


بلاول بھٹو اور نواز شریف نے قومی سیاسی معاملات میں افہام و تفہیم اور اتفاق رائے سے ساتھ چلنے کے عزم کا اظہار کیا،ملاقات سے قبل میڈیا سے مختصر گفتگو میں بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ پاکستان اس وقت دوراہے پر کھڑا ہے۔

انھوں نے کہا ملک کو درپیش چیلنجز کا اس وقت مقابلہ کرسکتے ہیں جب پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑی ہوں۔
ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی ترقی اور خوش حالی کے لیے جو کچھ پاکستان پیپلز پارٹی سے ہوسکا وہ کریں گے۔

بلاول بھٹو زرداری نے پاکستان کی جمہوریت کی بحالی کے لیے سابق وزیراعظم نواز شریف کی قربانیوں کی تعریف کی،انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جمہوریت کی بحالی میں جو کردار میاں صاحب کا ہے وہ ہم سب کے سامنے ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کا ماضی میں جو تجربہ ہے اس کے پیش نظر دونوں پارٹیوں کو احساس ہے کہ یہ موقعہ ملک کے لیے کتنا اہم ہے

0Shares

Comments are closed.