ایم کوایم کا حکومت سے علحیدگی کا اعلان ، وزیراعظم استعفیٰ دیں، اپوزیشن

اسلام آباد(زمینی حقائق ڈاٹ کام) ایم کوایم کا حکومت سے علحیدگی کا اعلان ، وزیراعظم استعفیٰ دیں، اپوزیشن نے مطالبہ کردیا،اپوزیشن رہنماوں نے کہا کہ بہتر اخلاقی راستہ یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان مستعفی ہو جائیں۔

ایم کیو ایم کے سربراہ خالد مقبول صدیقی نے بلاول بھٹو، شہباز شریف اور مولانا فضل الرحمان کے ہمراہ پریس کانفرنس کے  خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ ہمارے معاہدہ کی تمام شقیں عام عوام کے مفاد میں ہیں.

خالد مقبول نے کہا کہ ہم نےذاتی مفاد پیش نظر رکھان نہ ہی جماعتی مفاد کی بات کی، ایم کیو ایم کے سربراہ خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ ایسے دور کا آغاز کریں جہاں سیاسی اختلاف کو دشمنی نہ سجھاجائے، ہمارا آپ کے ساتھ چلنے میں کوئی ذاتی مفاد نہیں ہے۔

خالد مقبول نے کہا کہ معاہدے اور مطالبے کی ایک ایک شق عوام کےلیے ہے اس میں ہمارا ذاتی یا جماعتی مفاد شامل نہیں ہے۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا کہنا ہے کہ عمران خان اکثریت کھوچکے ہیں، عمران خان استعفیٰ دے کر نئی روایات قائم کرسکتے ہیں۔

صدر مسلم لیگ ن نے کہا کہ یہ اپوزیشن کا متحدہ قومی جلوہ ہے، ایم کیو ایم پاکستان کا شکریہ ادا کرتا ہوں، جنہوں نے اتحاد کی مضبوطی میں اہم فیصلہ کیا۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پی پی اور ایم کیو ایم کے تعلقات کا عدم اعتماد سے تعلق نہیں، کراچی اور پاکستان کی ترقی کےلیے محنت کرنی ہے۔

پی پی چیئرمین نے کہا کہ ایم کیوایم اور پیپلزپارٹی کی دوریوں کی سازش سے پورے پاکستان کا نقصان ہوا، مل کر کراچی اور پاکستان کی ترقی کےلیے قدم اٹھائیں گے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان اپوزیشن کی صف میں شامل ہوچکی، جس کے بعد وزیراعظم کی اکثریت مکمل طور پر ختم ہوچکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے پاس کوئی آپشن نہیں رہا، استعفیٰ دینا ہے، کل ہی ووٹنگ کروائیں، اس معاملے کو انجام تک پہنچائیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ جمہوریت کی بحالی، معاشی بحران سے نکلنےکا سفر شروع کرنا ہے، جمہوری ہتھیار اپنا کر ان کے خاتمےکا بندوبست کیا۔

0Shares

Comments are closed.