غیر یقینی ختم، عدم اعتماد کیلئے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کر لیا گیا

اسلام آباد(زمینی حقائق ڈاٹ کام)غیر یقینی ختم، عدم اعتماد کیلئے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کر لیا گیا، اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے تحریک عدم اعتماد کے لیے اسمبلی کا ہنگامہ خیز اجلاس 25 مارچ کو طلب کیا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق اسپیکر اسد قیصر نے قومی اسمبلی کا اجلاس 25 مارچ جمعہ کو صبح 11 بجے طلب کرلیا۔ یہ اجلاس آئین کی شق 54 (3) اور شق 254 کے تحت تفویص اختیارات کے تحت طلب کیا گیا۔

یہ موجودہ قومی اسمبلی کا 41 واں اجلاس ہوگا جسے اپوزیشن کی جانب سے جمع کرائی گئی ریکوزیشن پر طلب کیا گیا ہے۔

تحریک عدم اعتماد پیش کرنے کے لیے یہ اجلاس طلب کیا ہے۔ اجلاس بلانے میں تاخیر پر اپوزیشن نے او آئی سی کانفرنس کا انعقاد روکنے کی دھمکی دی تھی تاہم اب حکومت نے اجلاس بلالیا ہے۔

اسپیکر قومی اسمبلی نے 25 مارچ کو قومی اسمبلی اجلاس بلانے کی وجوہات بھی اپنے حکم نامے میں بیان کردیں۔ اسپیکر نے کہا ہے کہ 8 مارچ کو اپوزیشن کی جانب سے اجلاس بلانے کی ریکوزیشن موصول ہوئی.

قومی اسمبلی نے او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس کے قومی اسمبلی ہال میں انعقاد کے لیے 21 جنوری کو قرار داد منظور کی تھی، او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس کے لیے قومی اسمبلی چیمبر کو فروری کے آخر میں ضروری تزئین و آرائش کے لیے وزارت خارجہ کے سپرد کردیا تھا ۔

اسپیکر نے کہا کہ سینیٹ سیکریٹریٹ سے سینیٹ ہال دینے کی درخواست کی گئی، سینیٹ سیکریٹریٹ نے بھی ہال کی تزئین و آرائش کے باعث چیمبر دینے سے انکار کردیا۔

اسپیکر اسد قیصر کے مطابق ڈپٹی کمشنر اور چیئرمین سی ڈی اے نے بھی تحریری طور پر قومی اسمبلی اجلاس کے کوئی مناسب جگہ نہ ہونے سے تحریری طور پر آگاہ کیا، تمام حالات و واقعات کا جائزہ لینے کے بعد قومی اسمبلی کا اجلاس اب25 مارچ کو بلایا جارہا ہے.

0Shares

Comments are closed.