سپریم کورٹ نے گریڈ7تک ملازمین بحال کردیئے، باقی ٹیسٹ دیں گے

اسلام آباد( زمینی حقائق ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے گریڈ7تک ملازمین بحال کردیئے، باقی ٹیسٹ دیں گے،عدالت نے سرکاری ملازمین کی بحالی کی اپیلیں مسترد کردیں۔

سپریم کورٹ نے گزشتہ روز برطرف ملازمین کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا جو آج سنایا گیا، آرٹیکل 184/ 3 (از خود نوٹس) اور 187 کے اختیار کو استعمال کرتے ہوئے گریڈ ایک سے 7 کے سرکاری ملازمین کو بحال کیا گیا۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے محفوظ کیا گیا فیصلہ پڑھ کر سنایا، جس میں کہا گیا ہے کہ عدالت نے سرکاری ملازمین کی بحالی کی اپیلیں مسترد کردی ہیں، چار ججز نے اپیلیں مسترد کرنے کے حق میں فیصلہ دیا۔

جسٹس منصور علی شاہ نے اپیلیں مسترد کرنے سے اختلاف کیا تاہم عدالت نے آرٹیکل 184/ 3 اور آرٹیکل 187 کے اختیار کو استعمال کرکے گریڈ ایک سے 7 کے ملازمین کو بحال کیا۔

عدالتی فیصلے کے مطابق گریڈ 8 اور اس سے اوپر کے ملازمین کی بحالی کو محکمانہ ٹیسٹ پاس کرنے سے مشروط کردیا گیاہے، تاہم کرپشن مس کنڈکٹ یا عدم حاضری پر نکالے گئے ملازمین بحال نہیں ہوں گے۔

سپریم کورٹ نے ہدایت کی کہ بھرتی کے وقت ٹیسٹ لازمی کی شرط کو فالو کیا جائے گا ، جن ملازمین نے بھرتیوں کے وقت ٹیسٹ نہیں دیا اب دیں گے، فیصلے کے بعد عدالت کے باہر موجود ملازمین نے فیصلہ پر خوشی کااظہار کیا۔

ذرائع کے مطابق عدالتی فیصلہ کے باوجود جو ملازمین ٹیسٹ میں فیل ہو گئے وہ بحال نہیں ہوں گے تاہم جو برطرف ملازمین ٹیسٹ کے عمل میں کامیاب ہو گئے انھیں بحال تصور کیا جائے گا۔

0Shares

Comments are closed.