پاکستان چین کو پیازبرآمد کریگا، پروٹوکول پر دستخط کر دیئے

اسلام آباد(شِنہوا) پاکستان چین کو پیازبرآمد کریگا، پروٹوکول پر دستخط کر دیئے، پیازکی برآمد کے لیے معائنہ اور قرنطینہ شرائط کے پروٹوکول پر دستخط کیے گئے۔

دستخطوں کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیربرائے نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ سید فخر امام نے کہا کہ چین کی برآمدی منڈی حاصل ہونے سے ہی ملک کی پیاز کی برآمدات کو فروغ ملے گا۔

وفاقی وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی نے کہا کہ چین ایک انتہائی نفیس مارکیٹ ہے جو دنیا بھر سے اپنے صارفین کے لیے اعلیٰ معیار کا پیاز خریدتا ہے.

انھوں نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ پاکستان کی زرعی برادری اور حکومتی عہدیدار چینی عوام کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے ان معیارات کو حاصل کرنے میں کامیاب ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان دنیا میں پیاز پیدا کرنے والا چھٹا سب سے بڑا ملک ہے پیاز کے بہتر معیارکے ساتھ ہمیں امید ہے کہ ایک خاص مرحلے پرپیاز کوپراسس کرتے ہوئے چین کوپروسیس شدہ پیاز برآمد کرسکیں۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان میں چین کے سفیر نونگ رونگ نے کہا کہ حالیہ برسوں میں چین پاکستان زرعی تجارت میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے.

زرعی تجارت 2011 کی 49 کروڑ امریکی ڈالر کی سطح سے بڑھ کر 2019 میں 83 کروڑ ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔

چینی سفیر نے کہا کہ 2020 میں کوویڈ-19 کی وبا سے متاثرہونے کے باوجود دو طرفہ زرعی تجارت کا حجم اب بھی 77کروڑ امریکی ڈالر کی بلند سطح پرہے۔

رواں سال جنوری سے ستمبر تک، چین پاکستان زرعی تجارت ریکارڈ 86 کروڑ ڈالر رہی ہے جس میں سے پاکستان سے چین کو برآمدات کا حجم 63کروڑ ڈالر رہا جو گزشتہ سال کی نسبت دوگنا سے زیادہ ہے۔

0Shares

Comments are closed.