ڈیڈ لاک ٹوٹ گیا، آئی ایم ایف سے اسی ہفتہ معاہدہ ہوگا، مشیر خزانہ

اسلام آباد(ویب ڈیسک)وزیر اعظم کے مشیر برائے خزانہ شوکت ترین نے کہاہے پاکستانی اور آئی ایم ایف کے درمیان ڈیڈ لاک ٹوٹ
چکا ہے اور 6 ارب ڈالر کے توسیعی فنڈ کی بحالی کے معاملات طے پاگئے ہیں اور معاہدہ اسی ہفتے ہوجائے گا۔

مشیر خزانہ نے ایک تقریب سے خطاب میں کہا کہ حکومت پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان ڈیڈ لاک تب ٹوٹا جب فریقین اسٹیٹ بینک آف پاکستان کو خود مختاری دینے کے معاملے پر اپنے اپنے موقف سے پیچھے ہٹے۔

شوکت ترین نے کہا کہ اسٹیٹ بینک سے متعلق قانون کے لیے آئینی ترامیم کی ضرورت ہے جس کے لیے ہمارے پاس حکومت میں دو تہائی اکثریت نہیں ہے اور مذاکرات میں یہی بات آئی ایم ایف کو سمجھانے کی کوشش گئی۔

واضح رہے شوکت ترین کی سربراہی میں پاکستان کی اقتصادی ٹیم نے فنڈ حکام کے ساتھ بات چیت کے کئی دور کیے ہیں تاکہ انہیں پارلیمنٹ کے ایوان زیریں اور ایوان بالا میں حکمران پاکستان تحریک انصاف کی عددی طاقت سے آگاہ کیا جا سکے۔

مشیر خزانہ کا نیشنل بینک پر سائبر حملے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ایف بی آر اور نیشنل بینک کے بعد مزید سائبر حملوں کا خدشہ ہے، دشمن ملک ہمارے پڑوس میں بیٹھا ہے۔

شوکت ترین نے کہاسرکاری ملازمین کی تنخواہیں لیٹ نہیں ہوں گی، صورت حال پر قابو پا لیا گیا ہے،مہنگائی پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مہنگائی پر قابو پانے کے لیے ٹارگٹڈ سبسڈی دے رہے ہیں تاہم مہنگائی ایک عالمی مسئلہ ہے۔

مشیر خزانہ شوکت ترین نے کہا کہ سنگل ونڈو کا افتتاح اصلاحات کی جانب اہم قدم ہے، اس سے تجارت کو فروغ حاصل ہوگا، حکومت تبدیلی، اصلاحات اور احتساب کا نعرہ لے کر آئی ہے اور ادارہ جاتی اصلاحات کے لیے اہم اقدامات کیے ہیں۔

مشیر خزانہ نے کہا کہ گزشتہ دو سالوں میں کورونا وائرس کے باعث سپلائی چین متاثر ہوئی، اب معیشت بحالی کی جانب گامزن ہے، کاروباری افراد تمام مواقع سے فائدہ اٹھانے کے لیے تیار ہیں، پاکستان سنگل ونڈو سے پاکستانی برآمدات میں اضافہ ہوگا۔

0Shares

Comments are closed.