ویڈیو لیک پر بیوی ڈپریشن میں ہے، بیٹی روتی ہے، محمد زبیر

لاہور (ویب ڈیسک) سابق گورنر سندھ محمد زبیر کچھ دن خاموشی کے بعد اپنی نازیبا ویڈیو لیک ہونے پر بول پڑے ہیں اور ویڈیو لیک ہونے کے بعد کے مسائل پر بات کی ہے. 

مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما محمد زبیر نے پہلی بار منظر عام پر آئے اور ویڈیو لیک ہونے پر تفصیلی گفتگو کی ہے اور بتایا ہے کہ کسی بھی شخص کی فیملی یہ چیزیں برداشت نہیں کرتی۔

مریم نواز کے ترجمان محمد زبیر نے بتایا کہ ویڈیو سکینڈل کے بعد میری اہلیہ کی حالت بہت خراب ہوئی ،میں یہی کہوں گا کہ آپ میرے ساتھ سیاست کریں، میری سیاست کو تہس نہس کر دیں میں برداشت کروں گا. 

انھوں نے کہا کہ جو کچھ کیا گیا یہ میرے خاندان کے لیے برداشت کرنا بہت مشکل تھا

ویڈیو سکینڈل کے بعد میری بیوی ڈپریشن میں چلی گئی۔ویڈیو سکینڈل کے بعد میری بیٹی کا رو رو کر برا حال ہوگیا۔

اگر میری واقعی ہی کوئی نازیبا ویڈیو تھی تو اس کو ریلیز کر دیتے لیکن جس طرح پیکج بنا کر ویڈیو کو اپلوڈ کیا گیا اس سے واضح تھا کہ سیاسی انتقام لیا جا رہا ہے۔

ان کا موقف تھا کہ ویڈیو پیکج میں کہا گیا کہ میں نواز شریف کا سپاہی ہوں۔ملک کے ایک انتہائی معزز بزنس مین کا نام بھی مجھ سے جوڑا گیا کہ وہ مجھے خواتین لا کر دیتا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں ان تمام لوگوں کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے اس موقع پر میرا ساتھ دیا۔مریم نواز نے بھی کہا کہ آپ کی جماعت آپ کے ساتھ کھڑی ہےمحمدزبیر میرے ترجمان رہیں گے تو اس سے بڑھ کر میرے لئے اور کوئی بات نہیں تھی۔

محمد زبیر نے مزید کہا کہ خاتون صحافی غریدہ فاروقی سمیت جن خواتین کا بھی اس معاملے سے نام جوڑا گیا مجھ پر مجھے اس پر بہت افسوس ہے۔

 ایف آئی اے میں جانے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ کیا میں اس ایف آئی اے سے رابطہ کرو جس کے سربراہ شیخ رشید ہیں۔کیا میں تحقیقات کے لئے ان لوگوں کے پاس جاؤں جو اس سارے کام کے پیچھے ہیں۔

0Shares

Comments are closed.