گوادر میں حملے کی جامع تحقیقات کی جائیں، چینی سفارتخانہ

0 0
Read Time:1 Minute, 23 Second


اسلام آباد( ویب ڈیسک)چین نے گوادر میں چینی شہریوں کے قافلے پر خودکش حملے کی مذمت کرتے ہوئے حکومت پاکستان سے سکیورٹی کو بہتر بنانے کے لیے کہا ہے۔

اسلام آباد میں چینی سفارتخانے کی ویب سائٹ پر جاری بیان میں دونوں ممالک کے زخمیوں سے ہمدردی کا اظہار اور ہلاک ہونے والے دو پاکستانی شہریوں کے خاندانوں سے تعزیت کی گئی ہے۔

چینی سفارت خانے نے پاکستان میں ہنگامی پلان کے آغاز کا اعلان کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ زخمیوں کا مکمل علاج کیا جائے، واقعے کی جامع تحقیقات کی جائیں اور اس میں جو عناصر ملوث ہیں ان کو قرار واقعی سزا دی جائے۔

چینی سفارتخانہ کے بیان میں کہا گیاہے کہ پاکستان کے تمام متعلقہ ڈیپارٹمنٹس کو سکیورٹی کے حوالے سے اقدامات کو مزید محفوظ اور جامع بنانا چاہیے اور ایسا ماحول بنانا چاہیے کہ ایسے واقعات نہ ہو سکیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں رہنے والے چینی شہریوں کو ایک بار پھر یاد دلایا جاتا ہے کہ وہ ہوشیار رہیں، اپنے تحفظ کے اقدامات کو مضبوط بنائیں، بلاضرورت باہر نکلنے سے گریز کریں۔

واضح رہے گزشتہ روز( جمعہ )بلوچستان کے شہر گوادر میں چینی حکام کو لے جانے والے قافلے کے قریب حملہ ہوا جس سے ایک چینی شہری زخمی اور دو مقامی بچے ہلاک ہوئے، زخمیوں کو گوادر ہسپتال پہنچایا گیا۔

دھماکے کے بعد وزارت داخلہ کے بیان میں کہا گیا تھاکہ گوادر میں ایسٹ بے ایکسپریس وے پر ایک بزدلانہ حملے میں پاکستان آرمی اور پولیس کے دستوں کی مربوط سکیورٹی کے ہمراہ چار گاڑیوں پر مشتمل چینی شہریوں کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا،یہ حملہ فشر مین کالونی کے قریب کوسٹل روڈ پر ہوا۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Comments are closed.

Translate »