کورونا جنگ سے کم نہیں، فوجی اسپتال عوام کیلئے کھولے جائیں، جسٹس فائز

0 0
Read Time:1 Minute, 29 Second


اسلام آباد(ویب ڈیسک)کورونا وباء میں مبتلا سپریم کورٹ کے فاضل جج جسٹس قاضی فائز عیسی نے کہا ہے کہ کورونا کے باعث حالات کسی جنگ سے کم نہیں ہیں اس لئے تمام سرکاری اور افواج پاکستان کے اسپتال عوام کے لئے فوری کھولے جائیں۔

جسٹس قاضی فائز عیسٰی نے اسپتال سے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ مجھے اور میری اہلیہ کو کورونا ویکسین مکمل لگ چکی ہے، تمام احتیاط کے باوجود ہم دونوں ڈیلٹا ویرینٹ کا شکار ہوئے، وباء کے دوران احتیاط کے حوالے سے اسلامی احکامات واضح ہیں۔

انھوں نے کہا بدقسمتی سے سماجی فاصلے کی پابندی پر عملدرآمد نہیں ہو رہا، عید الاضحی کی نماز کے دوران بھی ایس او پیز کی خلاف ورزی ہوئی، فیصل مسجد میں لوگوں نے کندھے سے کندھا ملا کر نماز ادا کی۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا کہ زندگی سب کا بنیادی حق اور صحت اس کا اہم ترین حصہ ہے، آئین کا آرٹیکل 9 زندگی کے تحفظ کا ضامن ہے، وباء سے نمٹنا ہماری مشترکہ قومی ذمہ داری ہے۔

کورونا کے دوران حالات کسی جنگ سے کم نہیں، تمام سرکاری اور افواج پاکستان کے اسپتال عوام کے لئے فوری کھولے جائیں، طبقاتی تفریق کہیں عوام کے جانی نقصان کا باعث نہ بن جائے، ٹی وی اور ریڈیو پر کورونا ماہرین سے عوام کو آگاہی دی جائے۔

یاد رہے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور ان کی اہلیہ گزشتہ ہفتے کورونا کا شکار ہوئے تھے ، گھر میں دوران علاج ان کی طبیعت خراب ہوئی تھی، جس کے بعد انہیں اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

واضح رہے پاک فوج کے اسپتال پہلے ہی عوام کیلئے کھلے ہیں اور ہر شہر میں عوام کو علاج معالجے کی سہولت حاصل ہے تاہم سول سرکاری اسپتالوں کی طرح عام عوام کو مفت علاج کی سہولت حاصل نہیں ہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
100 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Comments are closed.

Translate »