رکن قومی اسمبلی ملیکہ بخاری منہ پر بجٹ دستاویز لگنے سے زخمی


اسلام آباد( زمینی حقائق ڈاٹ کام)قومی اسمبلی اجلاس میں ہنگامہ آرائی اور اراکین کے ایک دوسرے کو بجٹ دستاویزات مارنے کے مقابلے کے دوران ایک بجٹ بک منہ پر لگنے سے پی ٹی آئی کی رکن قومی اسمبلی ملیکہ بخاری زخمی ہو گئیں۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک خاتون وفاقی وزیر پہلے نعرہ بازی اور بک سے ڈیسک بجانے میں بھی پیش پیش رہیں اور بعد میں وہی ملیکہ بخاری کے ساتھ بیٹھی کہہ رہی ہیں کہ خواتین کو نشانہ بنا یاگیا۔

مبینہ طور پر ایوان میں شور شرابا حکومتی اراکین نے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی تقریر کے دوران کیا تاہم اس کے بعد فقرے کسنے کا مقابلہ شروع ہوا جو گالم گلوچ اور دستاویزات مارنے تک جا پہنچا۔

بعد میں اس حوالے سے وفاقی وزیر مملکت فرخ حبیب نے بھی بتایا تھا کہ لڑائی کے دوران ملیکہ بخاری کی آنکھ پر بجٹ بک ماری گئی جس سے وہ زخمی ہوگئیں۔

فرخ حبیب کا کہنا تھاکہ شاہد خاقان عباسی کے کہنے پر ن لیگی اراکین گالم گلوچ پر اتر آئے، جس کے بعد لڑائی شروع کروائی گئی۔

انھوں نے الزام لگایا کہ ن لیگ کو خواتین اراکین اسمبلی کی عزت و احترام کا احساس نہیں اور خاص کر ملیکہ بخاری کی ویڈیو سوشل میڈیا پر شیئر کرتے ہوئے ساتھ لکھا کہ خاتون رکن کی آنکھ زخمی ہو گئی ہے۔

0Shares

Comments are closed.