سمجھ نہیں آتی لو گ شادی کیو ں کرتے ہیں، ملالہ یوسفزئی


اسلام آباد( ویب ڈیسک) نوبل انعام یافتہ طالبہ ملالہ یوسفزئی کے انٹرویو نے سب کو حیران کردیاہے وہ کہتی ہیں وہ یقین کے ساتھ نہیں کہہ سکتیں کہ وہ زندگی میں کبھی شادی بھی کریں گی۔

ملالہ نے ووگ میگزین کو دیے گئے طویل انٹرویو میں شادی سے متعلق سوال پر کہا کہ ان کے والدین نے پسند کی ارینج میرج کی تھی، وہ دونوں ایک دوسرے کو پسند کرتے تھے باقی کام دونوں کے والدین نے کردیا۔

ملالہ یوسفزئی نے کہا کہ مجھے اب بھی سمجھ نہیں آتی کہ لوگوں کو شادی کیوں کرنا پڑتی ہے، اگر آپ اپنی زندگی میں ایک شخص کو چاہتے ہیں تو آپ کو شادی کے کاغذات پر دستخط کرنے کی کیا ضرورت ہے، آخر کیوں یہ صرف ایک پارٹنر شپ نہیں ہوسکتی؟

ملالہ یوسفزئی نے ساتھ ہی یہ بھی بتایا کہ ان کی والدہ ان کی اس سوچ سے متفق نہیں ہیں ،وہ کہتی ہیں ملالہ ایسی بات کرنے کی ہمت بھی نہ کرنا ، تمہیں شادی کرنی ہی ہوگی، شادی خوبصورت چیز ہے۔

ملالہ نے بتایا کہ ان کے والد کو رشتے کے حوالے سے ای میلز موصول ہوتی رہتی ہیں، ایک لڑکا کہتا ہے کہ اس کے پاس بہت سی زمین اور کافی گھر ہیں ، وہ مجھ سے شادی کرنا چاہتا ہے۔

ملالہ یوسفزئی نے مزید کہا کہ اگرچہ اب میرا یونیورسٹی میں دوسرا سال ہے لیکن میں سوچتی ہوں کہ میں کبھی شادی نہیں کروں گی، میرے کبھی بچے نہیں ہوں گے، میں بس اپنا کام کرتی رہوں گی، میں اپنی فیملی کے ساتھ ہنسی خوشی رہوں گی۔

انھوں نے کہا کہ میں نہیں سمجھتی کہ آپ ہمیشہ ہی ایک جیسے رہتے ہیں، جب آپ کی عمر بڑھتی ہے تو آپ میں تبدیلی آتی ہے۔

0Shares

Comments are closed.