پنڈی ٹیسٹ،سری لنکا نے پہلے دن 5 وکٹوں کے نقصان پر 202 رنز بنا لئے

فوٹو : ٹوئٹر پاکستان کرکٹ

راولپنڈی(زمینی حقائق ڈاٹ کام) سری لنکا نے پنڈی ٹیسٹ کے پہلے دن پاکستان کیخلاف 5 وکٹوں پر 202 رنز بنالیے، کم روشنی کے باعث کھیل وقت سے پہلے ختم کرنا پڑا۔

سری لنکن کپتان ڈیموتھ کرونا رتنے نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تھا اور کرونا رتنے اور اوشادا فرنینڈو نے اننگز کا آغاز کیا اور ٹیم کو اچھی شروعات فراہم کی۔

سری لنکا کی پہلی وکٹ 96 کے مجموعی اسکور پر گری جب کرونارتنے 59 رنز بناکر شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے، 109 کے مجموعی اسکور پر اوشادا فرنینڈو بھی 40 رنز بناکر نسیم شاہ کا شکار ہوگئے۔

  کوشل مینڈس اور اینجلو میتھیوس بالترتیب 10 اور 31 رنز بناکر آوٹ ہوئے ۔ ان کی وکٹیں عثمان شنواری اور نسیم شاہ نے حاصل کیں۔

سری لنکا کے پانچویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی دنیش چندی مل تھے جو صرف دو رنز بناسکے،68.1 اوورز میں سری لنکا نے 5 وکٹوں کے نقصان پر 202 رنز بنائے تھے کہ خراب روشنی کی وجہ سے کھیل روک دیا گیا جو دوبارہ شروع نہ ہوسکا۔

پہلے دن کھیل ختم ہوا تو دھنن جایا ڈی سلوا 38 اور  نیروشن ڈک ویلا 11 رنز بناکر کریز پر موجود تھے، پاکستان کی جانب سے نسیم شاہ نے 2 جبکہ عثمان شنواری، شاہین شاہ آفریدی اور محمد عباس نے ایک ایک کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

کھانے کے وقفہ تک سری لنکا نے بغیر کسی نقصان کے 89 رنز بنا ئے تھے. دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے ٹیسٹ کے پہلے سیشن کا اختتام ہوا تو کرونا رتنے 57 اور فرنینڈو 26 رنز پر ناٹ آؤٹ ہیں.

شاہین شاہ آفریدی،محمد عباس، عثمان شنواری اور نسیم شاہ پر مشتمل پاکستان کی پیس بیٹری پہلے سیشن میں کوئی وکٹ نہ لے سکی، عثمان شنواری نے آج ڈیبیو بھی کیا ہے.

اس سے قبل راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے جا رہے میچ میں سری لنکن کپتان ڈیموتھ کرونا رتنے نے ٹاس جیت کر  وکٹ کو بیٹنگ کے لیے سازگار قرار دے کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

کرونا رتنے کا کہنا تھا ہمارے پلیئرز  ایسی کنڈیشنز میں کھیلنے کے عادی ہیں اور اسکور بورڈ پر بڑا ٹوٹل سجانے کی کوشش کریں گے۔

قومی ٹیم کے کپتان اظہر علی کا کہنا تھا کہ ہم نے بہت عرصے سے پاکستان میں کرکٹ نہیں کھیلی، عابد علی اور عثمان شنواری ٹیسٹ ڈیبیو کر رہے ہیں، قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق نے عابد علی اور بولنگ کوچ وقار یونس نے عثمان شنواری کو ٹیسٹ کیپ پہنائی۔

اظہر علی کا کہنا تھا وکٹ کو دیکھ کر چار فاسٹ بولرز کو کھلانے کا فیصلہ کیا ہے، یاسر شاہ کو ٹیسٹ اسکواڈ سے ڈراپ کرنا مشکل فیصلہ تھا۔

یاد رہے پاکستان کے تمام 11 پاکستانی کھلاڑی سری لنکا کے خلاف ہوم گراؤنڈ پر پہلا ٹیسٹ کھیل رہے ہیں حالانکہ اظہر علی 75 اور اسد شفیق 71 ٹیسٹ کھیل چکے ہیں لیکن دونوں نے سری لنکا کے خلاف کوئی ٹیسٹ پاکستان میں نہیں کھیلے ہیں ۔

0Shares

Comments are closed.