آسٹریلوی ٹیم کے دورہ پاکستان پر خدشات کے بادل منڈلانے لگے

فوٹو: فائل

کینبرا( ویب ڈیسک)آسٹریلوی ٹیم کے دورہ پاکستان پر خدشات کے بادل منڈلانے لگے،ایک بار پھر سکیورٹی کے حوالے سے اگر مگر نے دورے کے حوالے سے خدشات کو جنم دیاہے۔

اس حوالے سے آسٹریلین کرکٹرز ایسوسی ایشن (اے سی اے) کے سربراہ ٹوڈ گرین برگ نے کہا ہے کہ متعلقہ حکام کی یقین دہانیوں کے باوجود چند کھلاڑی ملک کے دورے میں بے چین ہو سکتے ہیں۔

گرین برگ نے کہا کہ اے سی اے کے اہلکار سکواڈ کے ساتھ سفر کریں گے تاکہ کھلاڑیوں کو یہ دکھایا جا سکے کہ وہ سب متحد ہیں اور اس میں ایک ساتھ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ سمجھا جاتا ہے کہ ایک یا دو کھلاڑی دورے سے باہر ہو جائیں گے اور ان پر دورے پر جانے کا کوئی دباؤ نہیں ہے، اے سی اے نے گزشتہ سال کے آخر میں پاکستان کے پری ٹور پر کرکٹ آسٹریلیا کے ساتھ کیا اور تمام رپورٹس بہت مثبت تھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم آسٹریلیا کے محکمہ خارجہ اور تجارت اور دیگر سرکاری تنظیموں کے مشورے جاری رکھیں گے کیونکہ ہمیں نہ صرف کھلاڑیوں بلکہ ان کے اہل خانہ کو مطمئن کرنے کی ضرورت ہے کہ یہ دورہ محفوظ ہے۔

دوسری طرف کرکٹ آسٹریلیا کے چیف ایگزیکٹو نک ہاکلے نے گرین برگ کے بیان کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھی کرکٹرز کو آرام دہ ماحول فراہم کرنے کے لیے دورے کے کم از کم ایک حصے کے لیے پاکستان میں موجود ہوں گے۔

واضح رہے آسٹریلوی ٹیم کا رواں سال مارچ اور اپریل میں دورہ پاکستان شیڈولڈ ہے جس میں تین میچوں کی ٹیسٹ سیریز، تین ون ڈے میچوں کی سیریز اور ایک ٹی ٹونٹی میچ کھیلا جائے گا۔

آسٹریلیا کا1998ء کے بعد یہ پاکستان کا پہلا دورہ ہوگا ،یہ دیکھنا باقی ہے کہ کون سے کھلاڑی اس دورے سے باہر ہوتے ہیں، کرکٹ آسٹریلیا کی جانب سے عندیہ ملا ہے کہ آسٹریلین ٹیم کے چند کھلاڑی دورہ پاکستان پر ہچکچاہٹ کا شکار ہو سکتے ہیں۔

0Shares

Comments are closed.