ٹی ٹی پی اور حکومت پاکستان 30مئی تک جنگ بندی میں توسیع پر منفق

فوٹو :فائل

کابل(ویب ڈیسک) ٹی ٹی پی اور حکومت پاکستان 30مئی تک جنگ بندی میں توسیع پر منفق ہو گئے ہیں ، یہ اتفاق رائے مزاکرات میں کیاگیاہے۔

افغان وزیراطلاعات ذبیح اللہ مجاہد نے ٹوئٹر پر بیان میں بتایا کہ یہ مزاکرات طالبان حکومت کی ثالثی میں ہو رہے ہیں جس میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور حکومت پاکستان کے درمیا ن ڈائیلاگ ہوئے ۔

ذبیح اللہ مجاہد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بتایا کہ حکومت پاکستان اور ٹی ٹی پی کے درمیان دو روز تک جاری رہنے والے مذاکرات میں عارضی جنگ بندی کو 30 مئی تک برقرار رکھنے پر اتفاق کرلیا گیا ہے۔

ترجمان طالبان حکومت ذبیح اللہ مجاہد کے مطابق جنگ بندی پر اتفاق حکومت پاکستان اور ٹی ٹی پی کے درمیان امارت اسلامیہ افغانستان کی ثالثی میں کابل میں ہونے والے مذاکرات میں ہوا جس کے دوران فریقین نے دیگر متعلقہ امور پر بھی بات چیت کی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مختلف چینلز کو نامعلوم مقام سے موصول ہونے والے تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان محمد خراسانی کے بیان میں بھی طالبان حکومت کی ثالثی میں پاکستان کے ساتھ جنگ بندی میں 30 مئی تک توسیع کی تصدیق کی گئی ۔

اس حوالے سے ترجمان ٹی ٹی پی کے مطابق 13 اور 14 مئی کو ہونے والے مذاکرات میں ہماری جانب سے دو کمیٹیوں نے حصہ لیا، ایک کمیٹی محسود قبیلے کے 32 افراد پر مشتمل تھی جب کہ دوسری کمیٹی میں ملاکنڈ ڈیوژن کے مختلف قبائل کی 16 افراد شامل تھے۔

میڈیارپورٹس میں ڈان ڈاٹ کام کا حوالہ دے کر بتایا گیا ہے کہ کابل میں پاکستانی سفارت خانے کے ذرائع نے پاکستانی وفد کے دورے کی تصدیق کی لیکن مذاکرات کی تفصیلات کے معاملے میں کوئی بات نہیں کی۔

واضح رہے گزشتہ برس سابق وزیر اعظم عمران خان نے کالعدم تحریک طالبان پاکستان ک ساتھ مذاکرات کا عندیہ دیا تھا۔ ایک ماہ تک جاری رہنے والے مذاکرات کامیاب نہ ہوسکے تھے۔

0Shares

Comments are closed.