چیف جسٹس کے بعد ایک مفرور کا خطاب عدلیہ کی توہین ہے، فواد چوہدری

فوٹو: فائل

اسلام آباد(ویب ڈیسک) چیف جسٹس کے بعد ایک مفرور کا خطاب عدلیہ کی توہین ہے، فواد چوہدری نے یہ بات عاصمہ جہانگیر کی یاد میں منعقدہ کانفرنس کے اختتامی سیشن سے سابق وزیراعظم نواز شریف کے خطاب پر ردعمل میں کہی۔

وفاقی وزیرِاطلاعات و نشریات فواد چوہدری جھنوں نے خود اس کانفرنس میں شرکت سے معذرت کرلی تھی انھوں نے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کو بھی اس معاملے پر غیر جانبدار رہنے کا مشورہ دے دیا۔

فواد چوہدری نے اس حوالے سے جاری بیان میں کہا کہ کانفرنس کے منتظمین کی جانب سے اختتامی سیشن میں نواز شریف کا خطاب رکھنے پر سوال اٹھایا کہ وہ تو عدالتی مفرور شخص ہے جس نے اسی تقریب سے خطاب کیا ۔

انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس اور سینئر ججز کی تقریر کے بعد ایک مفرور شخص کا کانفرنس سے اختتامی خطاب رکھنا، ججوں اور عدلیہ کی توہین اور ملک اور آئین کا مذاق اُڑانے کے مترادف ہے۔

انہوں نے مشورے میں کہا کہ غیر جانبدار رہ کر ہی وکلا کوئی کردار ادا کرسکتے ہیں،مزید کہا کہ چیف جسٹس (ر) افتخار چوہدری کی عدالت کے بڑے مقدموں کی لسٹ نکلوائیں، ہر کیس میں حامد خان وکیل ہے اور دو تین لوگ اور ہیں۔

0Shares

Comments are closed.