جرمنی طالبان کے ساتھ سیاسی مزاکرات شروع کرنے کا حامی ہے، جرمن چانسلر

جرمنی کے شہر ہاگن میں صحافیوں سے گفتگو

German chancelor
0 0
Read Time:1 Minute, 7 Second

ہاگن ( ویب ڈیسک )جرمن چانسلر انجیلا میرکل نے کہا ہے کہ جرمنی طالبان کے ساتھ سیاسی مزاکرات شروع کرنے کا حامی ہے کیونکہ افغانستان کے تمام علاقوں پر ان کا غلبہ ہے۔

مغربی جرمنی کے شہر ہاگن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے جرمن چانسلر نے کہا کہ جرمن حکومت کے ساتھ مل کر کام کرنے والے افغانوں کو باہر نکالنے کے لیے بھی بات چیت ضروری ہے۔

انجیلا میرکل نے کہا کہ بہر حال حقیقت یہ ہے کہ ہمیں ان سے بات کرنی چاہئے کیونکہ اب وہی لوگ اقتدار میں ہیں جن کے ساتھ ہم بات چیت کرسکتے ہیں یہی زمینی حقیقت ہے۔

میرکل نے مزید کہا کہ ہم ان لوگوں کو وہاں سے باہر نکالنا چاہتے ہیں جنہو ں نے بالخصوص جرمن ترقیاتی تنظیموں کے لیے کام کیا ہے اور اب افغانستان میں خود کو خوفزدہ محسوس کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بات چیت سے ہمیں افغانستان میں انسانی امداد کی ترسیل جاری رکھنے میں بھی مدد ملے گی، ان کا کہنا تھا کہ کابل بین الاقوامی ہوائی اڈے کو حال ہی میں پروازوں کے لیے دوبارہ کھول دیا جانا ایک اچھا اشارہ ہے۔

اس موقع پر سی ڈی یو کے چانسلر کے عہدے کے امیدوار آرمن لاشیٹ جو میرکل کے ساتھ ہاگن شہر کے دورے پر موجود تھے نے بھی طالبان کے ساتھ بات چیت کرنے کی حمایت کی۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Comments are closed.

Translate »