قوم دیکھے گی کس کی ٹانگیں کانپتی ہیں ،عمران خان

0
0 0
Read Time:3 Minute, 2 Second


گلگت (زمینی حقائق ڈاٹ کام)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آنے والے دنوں میں قوم دیکھے گی کہ کس کی ٹانگیں کانپتی ہیں اور کس کے ماتھے پر پسینہ آتا ہے، آج یہ چور اور ڈاکو اکٹھے ہو گئے ہیں اور ملکی ریاستی اداروں کے خلاف باتیں کر رہے ہیں۔

عمران خان گلگت بلتستان کے 73 ویں قومی دن کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے، انھوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کو عبوری صوبائی حیثیت دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان کے اسکاؤٹس اور شہداء نے قربانیاں دے کر یہ خطہ آزاد کروایا جس پر انہیں خراج عقیدت پیش کرتا ہوں۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا آج میں یہاں کیلئے ترقیاتی منصوبوں کا بھی اعلان نہیں کر سکتاکیونکہ یہاں انتخابات کی وجہ سے ضابطہ اخلاق کا پاس رکھنا ہے تاہم ہماری حکومت کا ایک ہی مقصد ہے کہ پاکستان کے جو علاقے پیچھے رہ گئے ہیں انہیں اوپر لایا جائے۔

عمران خان نے کہا کہ ہندوستان میں مسلمانوں اور پاکستان سے سب سے زیادہ نفرت کرنے والی حکومت آئی ہے، بی جے پی کی حکومت نے کشمیر میں جو ظلم کیا، وہ آج سے پہلے کسی بھارتی حکومت نے نہیں کیا۔

وزیراعظم نے کہا پوری منصوبہ بندی سے پاکستان کیخلاف دہشت گردی کی جا رہی ہے، ان دہشت گردوں کے سامنے ہماری سیکیورٹی فورسز کھڑی ہیں۔ آج سیکیورٹی فورسز کی قربانیوں کی وجہ سے پاکستان محفوظ ہے، آج ہمارا وہ حال نہیں ہے کہ جو کئی مسلمان ملکوں کا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت صرف دہشت گردی کے ذریعے ہی نہیں بلکہ ملک میں شیعہ سنی انتشار بھی پھیلانا چاہتے تھے لیکن میں داد دیتا ہوں پاکستان کی انٹیلی جنس ایجنسیوں کو کہ انہوں نے بھارت کے ان عزائم کو ناکام بنایا۔

عمران خان نے کہا میں نے وزیراعظم بنتے ہی اعلان کیا تھا کہ جن لوگوں نے پاکستان کو لوٹا ہے انہیں نہیں چھوڑوں گا، آج یہ چور اور ڈاکو اکٹھے ہو گئے ہیں اور ملکی ریاستی اداروں کے خلاف باتیں کر رہے ہیں۔

میں نے کہا دھاندلی ہوئی ہے تو حلقے کھول دو لیکن یہ بھاگ گئے، ان لوگوں نے مجھے معیشت اور الیکشن پر بلیک میل کرنے کی کوشش کی، ایف اے ٹی ایف اور کورونا کے معاملے پر بھی بلیک میل کرنے کی کوشش کی۔

عمران خان نے کہا جب یہ لوگ مجھے بلیک میل کرنے میں ناکام ہو گئے تو ان لوگوں نے اب آرمی چیف اور آئی ایس آئی چیف پر بندوقیں تانی ہوئی ہیں، اگر یہ چور اور ڈاکو آرمی چیف اور آئی ایس آئی کے سربراہ کے خلاف بول رہے ہیں تو اس کا مطلب ہے کہ میں نے دونوں کا بالکل ٹھیک انتخاب کیا ہے۔

وزیراعظم نے کہا آج ہم پاکستان کے میر جعفر، میر صادق اور میر ایاز صادق کو دیکھ رہے ہیں، بھارتی پائلٹ ابھی نندن کے معاملے پر مجھے دنیا بھر سے مبارکباد کے پیغامات آئے اور یہ (ایاز صادق) آج کہہ رہے ہیں کہ پاکستان نے ڈر کر بھارتی پائلٹ کو حوالے کیا۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ یہ سب اس لیے ہو رہا ہے کہ عمران خان انہیں این آر او دے دے لیکن پوری قوم کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ عمران خان انہیں کبھی معاف نہیں کرے گا، قوم دیکھے گی کہ کس کی ٹانگیں کانپتی ہیں اور کس کے ماتھے پر پسینہ آتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب عدلیہ نے حدیبیہ ملز کیس میں ان کے حق میں فیصلہ دیا تو ٹھیک اور جب عدلیہ ان کے خلاف فیصلہ دے تو یہ عدلیہ کے خلاف بیان بازی پر اتر آتے ہیں، ان کی کوشش ہے کہ کسی طرح عدلیہ اور فوج پر دباؤ ڈال کر این آر او لیا جائے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »