بکنے کا بھی طریقہ ہوتاہے، پی پی اور اے این پی نے جگ ہنسائی کرائی

0
0 0
Read Time:1 Minute, 40 Second


اسلام آباد( ویب ڈیسک )جے یو آئی کے سیکرٹری جنرل عبدالغفورحیدری نے کہا ہے جھکنے اور بکنے کے بھی طریقے ہوتے ہیں، جس طرح کا پیپلزپارٹی اوراے این پی نے کا کردار ادا کیا اس سے جگ ہنسائی ہوئی ہے۔

نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے عبدالغفور حیدری نے کہا کہ اے این پی نے اعتراف کیا کہ ہم نے یاری دوستی میں یہ قدم اٹھایا، اصول اپنی جگہ ہوتے ہیں ، ایسے حالات میں شوکاز نوٹس تو آنا تھا جو کہ کوئی بری بات نہیں۔

پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان پر اے این پی کے الزامات کے ردعمل میں کہا ہے کہ تاریخ میں ایسا رسوا کن عمل نہیں ہوا ہے، یہ اتحاد تحریک کے لیے ہے انتخابات کے لیے نہیں تھا۔

عبدالغفورحیدری نے کہا کہ تحریکوں میں وہ لوگ چلتے ہیں جو تمام دباؤ کو برادشت اور مشکلات کو عبور کرنے کے ساتھ کشتیاں جلا کر چلتے ہیں، اگر یہ جماعتیں دباؤ برداشت نہیں کرتیں تو ان کی مرضی ہے۔

اب تک احتساب اور ذاتیات پر چلنے والے اپوزیشن اتحاد کے حوالے سے عبدالغفور حیدری نے دعویٰ کیا کہ پوری قوم توقع کررہی تھی کہ پی ڈی ایم کی تحریک سے مہنگائی سے نجات ملے گی اور آٹے ،چینی کی کرپشن سے چھٹکارا ملے گا۔

جے یو آئی کے سیکرٹری جنرل عبدالغفورحیدری نے کہا اے این پی نے فاش غلطی کی اور مولانا فضل الرحمان پر الزام لگایا، مولانا فضل الرحمان پرالزام لگانا مناسب نہیں تھا۔ یہ وقت بتائیگا کہ کس نے غلطی کی ہے۔

انھوں نے کہا کہ بعض دفعہ کمپرومائز ہوتا ہے لیکن اس سے تحریک کو نقصان نہیں ہونا چاہیے، اے این پی نے الگ ہو کر اپنی نیت کااظہار کیاہے ورنہ شوکاز سے کیا ہوتا ہے آپ سے آپ کاموقف ہی تو پوچھا گیا تھا۔

واضح رہے پی ڈی ایم کے شوکاز نوٹس کے جواب میں عوامی نیشنل پارٹی نے اپوزیشن اتحاد چھوڑنے کااعلان کردیاہے جب کہ پیپلز پارٹی کی طرف سے بھی اس پر سخت ردعمل آنے کی توقع کی جارہی ہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »