اپنے نام سے کپڑے کا برانڈ کیوں لانچ کیا؟ مولانا طارق جمیل

0
0 0
Read Time:1 Minute, 41 Second


اسلام آباد (ویب ڈیسک ) مولانا طارق جمیل نے تنقید کا جواب دینے کی بجائے کپڑوں کی برانڈ لانچ کرنے کی وجہ بتا دی ، مولانا نے ویڈیو پیغام میں تمام تر صورتحال کی وضاحت کردی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری ویڈیو پیغام میں مولانا طارق جمیل نے کہا کہ سَن 2000 سے میرے دل میں آتا تھا کہ اللہ کوئی ایسا سلسلہ بنا دے کہ میرے پاس جو مدارس ہیں وہ اپنے پاؤں پرکھڑے ہو جائیں۔

مولانا طارق جمیل نے کہا کہ میرے دل میں یہ بات تھی جس کے متعلق میں اکثر سوچتا تھا کہ یااللہ کوئی ایسی شکل بنا دے کے زکوٰة خرچ نہ ہو اور زکوٰة کے بغیر ہی مدرسہ کے انتظامات چلتے رہیں۔

انھوں نے بتایا کہ ایسے میں جب کورونا آیا تو اللہ نے میرے دل میں ڈالا کہ ہم کوئی کاروبار کریں جس کی کمائی کو ہم مدارس میں لگائیں تو میری بھی یہی نیت بنی کہ کوئی ایسا کاروبار ہو جس سے اللہ تعالیٰ بھی جزائے خیر دیاور چند دوستوں نے مل کر اس کی کوشش کی۔

انھوں نے بتایا کہ ہم نے میرے نام کا برانڈ ایم ٹی جے کے نام سے لانچ کرنے کا ارادہ کیا، چونکہ ہمارے بر صغیر میں علماء کا کاروبار کرنا عیب سمجھا جاتا ہے حالانکہ امام ابو حنیفہ سے بڑا کپڑوں کا تاجر کوئی نہیں تھا۔

مولانا طارق جمیل نے وضاحت کی کہ میں نے کسی کاروباری نیت سے یہ کام نہیں کیا، کسی کے مقابلے میں یہ کام نہیں کیا، صرف اس لیے کیا کہ اللہ کرے کہ اس سے کم از کم میرے مدارس اپنے پاؤں پر کھڑے ہو جائیں۔

عالمی سطح پر دین کی خدمت کیلئے مقبول معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے کہا کہ کپڑے کا برانڈ لانے کا مقصدصرف تجارت ہی نہیں ہے بلکہ اس تجارت کے پیچھے ایک بڑا مقصد ہے تاکہ میرے دنیا سے جانے کے بعد بھی یہ سلسلہ چلتا رہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »