نورجہان کا نواسہ ماموں سے شاہ نور اسٹوڈیو میں حصہ لینے عدالت پہنچ گیا

36
0 0
Read Time:1 Minute, 2 Second

اسلام آباد (ویب ڈیسک)  ماضی کی مشہور گلوکارہ ملکہ ترنم نور جہاں کے ورثا میں جائیداد کی تقسیم پر قانونی جنگ شروع ہوگئی۔

اس حوالے سےاے آر وائی نیوز کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملکہ ترنم نور جہاں کے ورثا میں جائیداد کی تقسیم پر جھگڑا شروع ہوگیا ہے، نواسے احمد بٹ نے سول عدالت میں کیس دائر کردیا۔

اسی کیس میں عدالت نے نور جہاں کے بیٹے اصغر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 17 اگست کو جواب طلب کرلیا۔

گلوکارہ نور جہاں کی بیٹی ظل ہما کے بیٹے احمد بٹ نے اپنے ماموں اصغر سے شاہ نور اسٹوڈیو میں حصہ نہ ملنے پر کیس دائر کیا ہے۔

لاہور ہائی کورٹ کے سول جج نوید انجم نے کیس پر سماعت کی اور 17 اگست کو جواب طلب کیا۔

نورجہاں کے نواسے احمد بٹ نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ شاہ نور اسٹوڈیو سے اس کی والدہ کا حصہ نہیں دیا گیا، استدعا ہے کہ عدالت شاہ نور اسٹوڈیو سے ہمیں حصہ دینے کا حکم جاری کرے۔

یاد رہے کہ ملکہ ترنم نور جہاں کی بیٹی ظل ہما عقیل بٹ کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئی تھیں اور احمد بٹ ان کا بیٹا ہے جس نے عدالت کا دروازی کھٹکھٹایا ہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleppy
Sleppy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *