عرفان صدیقی جیل منتقل، بھینس چوری مقدمہ کی یاد تازہ ہو گئی،مریم اورنگزیب

11
0 0
Read Time:1 Minute, 19 Second

اسلام آباد(ویب ڈیسک) کرایہ داری ایکٹ  کی خلاف ورزی پر گرفتار سابق وزیراعظم نواز شریف کے معاون خصوصی عرفان صدیقی کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا۔

پولیس کے مطابق رات گئے عرفان صدیقی کو  کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی پر گرفتار کر کے اسلام آباد کے تھانہ رمنا منتقل کیا گیا۔

عرفان صدیقی کے خلاف درج مقدمہ

پولیس کا کہنا ہے کہ عرفان صدیقی نے گھر کرائے پر دے رکھا تھا، انہوں نے کرایہ داری پر عمل درآمد نہ کیا اور نہ ہی پولیس اسٹیشن میں اس کا اندراج کروایا۔

اس کے علاوہ عرفان صدیقی کے ساتھ جاوید اقبال نامی شخص کو بھی حراست میں لیا گیا ہے جو کرائے کے مکان میں رہائش پزیر تھا۔

عرفان صدیقی کو گرفتار کر کے سیکشن 188 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا۔عرفان صدیقی کو مجسٹریٹ مہرین بلوچ کی عدالت میں پیش کیا گیا اور ان کے جوڈیشل ریمانڈ کی استدعا کی گئی۔

عرفان صدیقی کے وکیل نے عدالت سے پولیس کی جوڈیشل ریمانڈ کی درخواست مسترد کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے انہیں ضمانت پر بری کرنے کی استدعا کی تھی جسے عدالت نے مسترد کر دیا۔

عدالت نے عرفان صدیقی کے وکیل کی استدعا مسترد کرتے ہوئے نواز شریف کے سابق معاون خصوصی کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھیج دیا۔

ادھر ‎مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے نواز شریف کے  سابق مشیر عرفان صدیقی کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے آمر حکومت نے 78 سالہ عرفان صدیقی کو گرفتار کر کے بھینس چوری مقدمے کی یاد تازہ کر دی ہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleppy
Sleppy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *