عبدالرحمان مکی اور جماعت الدعوۃکے 3 رہنماوں کو سزائیں

0
0 0
Read Time:1 Minute, 29 Second

لاہور(ویب ڈیسک) کالعدم جماعت الدعوۃ کے تین رہنماؤں کو مزید 2 مقدمات میں سزائیں سنا دی گئیں جبکہ پانچ رہنماؤں پر 5 مقدمات میں فرد جرم بھی عائد کر دی گئی ہے۔

لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت نمبر 3 کے جج اعجاز احمد بٹر کی عدالت میں مقدمہ نمبر 24/19 کی سماعت ہوئی، جس میں پروفیسر ظفر اقبال اور یحییٰ مجاہد کو مجموعی طور پر 16، 16 سال جبکہ پروفیسر حافظ عبدالرحمٰن مکی کو ایک سال قید کی سزا سنائی گئی۔

یحییٰ مجاہد کو ایک اور مقدمہ 29/19 میں بھی 16 سال قید کی سزا سنائی گئی ہے، اے ٹی سی نمبر 3 میں ہی جماعت الدعوۃ کے 5 رہنماؤں پر مزید 6 مقدمات میں فرد جرم عائد کر دی گئی۔

حافظ عبدالسلام بن محمد، پروفیسر حافظ عبدالرحمٰن مکی، پروفیسر ظفر اقبال، یحییٰ مجاہد اور لقمان شاہ کو جج اعجاز احمد بٹر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

عدالت نے محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کی طرف سے درج مقدمہ نمبر 15/19، 21/19، 22/19، 27/19، 31/19 اور 42/19 میں ان رہنماؤں پر فرد جرم عائد کرتے ہوئے اگلی سماعت 16 نومبر تک ملتوی کی۔

ڈان نیوز کے مطابق انسداد دہشت گردی عدالت میں جماعت الدعوۃ کے رہنما محمد اشرف کے خلاف درج مقدمہ نمبر 40/19 کی بھی سماعت ہوئی جس میں گواہوں کے بیانات ریکارڈ کیے جارہے ہیں.

نصیرالدین نیئر اور محمد عمران فضل گل ایڈووکیٹ کی طرف سے جرح کا عمل جاری ہے، اس سے قبل جماعت الدعوۃ کے رہنماؤں کو عدالت پیش کئے جانے کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

واضح رہے کہ 5 نومبر کو بھی اے ٹی سی نے کالعدم جماعت الدعوۃ کے 3 رہنماؤں کو 2 مزید مقدمات میں سزائیں سنائی تھیں۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »