جہانگیر ترین ایشو،30ارکان کی وزیراعظم سے ملاقات کی درخواست

0
0 0
Read Time:2 Minute, 23 Second


لاہور( زمینی حقائق ڈاٹ کام)جہانگیر ترین کے معاملے پرتحریک انصاف کے 30 ارکان پارلیمنٹ، وزرا، مشیروں کے دستخطوں سے درخواست تیار کی ہے جس میں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی استدعا کی جائے گی تاکہ جہانگیر ترین کے ایشو پر بات کی جائے۔

تحریک انصاف کے ارکان پارلیمنٹ کی تیار کردہ درخواست آج ہی وزیراعظم کو ارسال کردی جائے گی، درخواست پر 8 ارکان قومی اسمبلی، 2 وزرا، 4 مشیروں اور ارکان اسمبلی کے دستخط ہیں۔

میڈیا سے گفتگو میں رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض نے وزیر اعظم سے ملاقات کے لئے درخواست تیار کرنے کی تصدیق بھی کی ہے اور دستخط والی درخواست بھی میڈیا تک پہنچ گئی ہے۔

رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض کا کہنا ہے کہ درخواست آج وزیر اعظم کو ارسال کر دی جائے گی، 30 ارکان نے دستخط کر دیئے ہیں، انھوں نے کہا کہ ہم وزیراعظم کو حقائق سے آگاہ کرنا چاہتے ہیں۔

گروپ نہیں بنایا، بلیک میلر ہیں نہ رعایت مانگ رہے ہیں

راجہ ریاض کا کہنا تھا کہ ہمارے کپتان اور لیڈر عمران خان ہیں، بلیک میلر نہیں، تحریک انصاف کے ہمدرد لوگ ہیں، عمران خان کے ساتھ کچھ لوگ ایسے ہیں جو جہانگیر ترین کو ٹارگٹ کر رہے ہیں، پی ٹی آئی اور عمران خان کو مضبوط دیکھنا چاہتے ہیں۔

راجہ ریاض نے واضح کیا کہ ہم وزیراعظم سے ملاقات کرکے کوئی رعایت نہیں مانگ رہے، عدالت سے سرخرو ہوں گے، سازش کر کے جہانگیر ترین کیخلاف مقدمات بنائے گئے۔

اس حوالے سے نعمان لنگڑیال نے کہا کہ جہانگیر ترین نے ہمیں پی ٹی آئی میں شامل کرایا اور عزت دلائی، جہانگیر ترین کی مدد کریں گے، ساتھ چلیں گے اور پارٹی کو مضبوط کریں گے، جو لوگ پارٹی کو کمزور کرنا چاہتے ہیں وہ ملک کو کمزور کرنا چاہتے ہیں۔

پی ٹی آئی رہنما نذیر چوہان نے شہزاد اکبر کی اہلیت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ شہزاد اکبر کے پاس کیا ہے، اس کی اہلیت کیا ہے، میں لاہور کا ایم پی ہوں، یہاں سے الیکشن جیتا ہوں ۔

وزیراعظم سے ملاقات کی درخواست پر ارکان اسمبلی کے دستخط

انہوں نے کہا کہ ہم دھرنوں میں پی ٹی آئی کیلئے بارشوں میں بھی کھڑے رہے، خان صاحب آپ ہمیں وقت دیں، دائیں بائیں سے فارورڈ بلاک کی باتیں ہو رہی ہیں، ایسا کوئی گروپ نہیں بنا نہ ہی ہمارا ایسا کوئی ارداہ ہے۔

واضح رہے دوسری طرف جہانگیر ترین نے تحقیقاتی ٹیم پر جانب دار ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ انکوائری ضرور کی جائے لیکن کسی ایک فون کال پر نہیں، کسی کے کہنے پر میرے خلاف تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ تحریک انصاف سے انصاف چاہئے، جب بھی عدالت بلائے گی پیش ہوں گا، قانون سے نہیں بھاگ رہے اور نہ بھاگیں گے، تحقیقات ضرور کریں لیکن شفاف ٹیم بنائیں جو متنازعہ نہ ہو، پی ٹی آئی میں ہوں، پارٹی میں نہیں ہوں گے تو کہاں جائیں گے ؟

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %
0Shares

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »